Premium Content

Add

بلاگ تلاش کریں۔

مشورہ

امریکی سینیٹ نے بھی ہم جنس پرستوں کی شادیوں کے تحفظ کا بل منظور کر لیا

Print Friendly, PDF & Email

امریکی سینیٹ نے وفاقی قانون کے تحت ہم جنس شادیوں کے تحفظ کے لیے بل منظور کرلیا جس پر صدر جو بائیڈن جلد دستخط کردیں گے جس کے بعد یہ قانون بن جائے گا۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی سینیٹ میں ہونے والی ووٹنگ میں 39 ریپبلک پارٹی کے نمائندوں نے بھی دو طرفہ ووٹنگ میں بل کے حق میں فیصلہ دیا۔ یہ قانون قدامت پسندوں کی زیرقیادت سپریم کورٹ کے رواں برس جون میں اسقاط حمل کے دیرینہ حقوق کو کالعدم قرار دینے کے بعد متعارف کرایا گیا تھا۔

خدشہ تھا کہ سپریم کورٹ کے قدامت پسند ججز ہم جنس پرستوں کی شادی کے حق پر بھی رکاوٹ بن سکتے ہیں۔ اس لیے پارلیمان نے فوری طور پر ہم جنس پرستوں کی شادی کے حق کو قانونی حیثیت دیدی۔

اس نئے قانون کو ’’ریس پیکٹ فار میرج ایکٹ‘‘ کے نام سے پکارا جائے گا۔

صدر جوبائیڈن نے ایک بیان میں کہا آج کانگریس نے یہ یقینی بنانے کے لیے ایک اہم قدم اٹھایا کہ امریکیوں کو اس شخص سے شادی کرنے کا حق حاصل ہے جس سے وہ پیار کرتے ہیں۔

امریکی صدر نے مزید کہا کہ دو طرفہ ووٹ لاکھوں ہم جنس پرستوں اور نسلی جوڑوں کو ذہنی سکون فراہم کرے گا جنہیں اب ان حقوق اور تحفظات کی ضمانت دی گئی ہے جس کے وہ اور ان کے بچے حقدار ہیں۔

اس سے قبل جولائی میں یہ قانون ایوان نمائندگان سے بھی منظور ہوچکا ہے اور اب سینیٹ میں منظوری کے بعد صرف امریکی صدر کے دستخط کی ضرورت ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

AD-1