Premium Content

!نوڈلز کا ذائقہ بتانے والا پہلا برقی نظام تیار کر لیا گیا

Print Friendly, PDF & Email

ٹوکیو: جاپان کی ایک کمپنی نے دنیا کا پہلا برقی آلہ بنایا ہے جو ایک قسم کے نوڈلز کا ذائقہ بتا سکتا ہے۔ یہ برقی نظام سو با نامی نوڈلز کے مزیدار ہونے یا نہ ہونے کے متعلق آگاہ کر سکتا ہے۔ یہ میتھی کے ذائقے والے نوڈلز ہوتے ہیں۔

مقامی کمپنی یائسرو گیگائکن انکارپوریشن نے ایک زرعی یونیورسٹی کے تعاون سے ذائقہ شناخت کرنے والا نظام بنایا ہے۔ اعلی ٹیکنالوجی پر مبنی نظام کے ایک حصے میں دو گرام نوڈلز رکھے جاتے ہیں۔ پھر اس پر بالائے بنفشی الٹراوائلٹ ایل ای ڈی کی روشنی ڈالی جاتی ہے۔ اس کے اندر کا نظام نوڈلز میں پروٹین، فاسفولائپڈز اور ذائقے کی تشکیل کرنے والے دیگر اجزا کا اندازہ لگاتا ہے۔ صرف چند سیکنڈوں میں یہ ذائقہ ظاہر کرنے والے چار عوامل اسکرین پر بتاتا ہے جن میں خوشبو، تازگی ، ذائقہ اور سبز اجزا کا معیارشامل ہے۔

واضح رہے کہ جاپانی افراد غذا کے ذائقے کے معاملے میں بہت حساس ہوتے ہیں اور اس کے لیے خطیر رقم خرچ کرتے ہیں۔ وہاں نوڈلز رغبت سے کھائے جاتے ہیں اور ان کے معیار کی بلند ترین قیمت بھی ادا کی جاتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ نوڈلز کے لیے پانی ابالنے کا وقت اور طریقہ کار کو بھی غیر معمولی اہمیت دی جاتی ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos