Premium Content

Add

کشمیری آج یوم حق خود ارادیت منا رہے ہیں

Print Friendly, PDF & Email

لائن آف کنٹرول کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری آج یوم حق خود ارادیت اس عزم کے ساتھ منا رہے ہیں کہ وہ اپنے بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ ناقابل تنسیخ حق کے حصول تک اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے۔

اس دن کو منانے کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس نے دی ہے۔

یہ 5 جنوری 1949 کو تھا جب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اقوام متحدہ کی زیر نگرانی استصواب رائے کے تحت کشمیریوں کے اپنے مستقبل کا خود فیصلہ کرنے کے حق کی حمایت کی قرارداد منظور کی۔

سات دہائیوں سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے لیکن اقوام متحدہ کی جانب سے 13 اگست 1948 اور 5 جنوری 1949 کی قراردادوں پر عمل درآمد کے لیے کوئی ٹھوس اقدامات نہیں کیے گئے۔

Don’t forget to Subscribe our Youtube Channel & Press Bell Icon.

مقبوضہ کشمیر کی صورتحال 05 اگست 2019 کو اس وقت سے خراب ہوئی جب نریندر مودی کی زیر قیادت فاشسٹ بھارتی حکومت نے علاقے کی خصوصی حیثیت کو منسوخ کر دیا۔

اے پی ایچ سی کے چیئرمین مسرت عالم بٹ، شبیر احمد شاہ، محمد یاسین ملک، آسیہ اندرابی اور نعیم احمد خان سمیت ہزاروں کشمیری بھارتی جیلوں میں بند ہیں۔

آزاد جموں و کشمیر میں تمام اضلاع میں احتجاجی مظاہرے، ریلیاں، سیمینارز اور دیگر پروگرام منعقد کیے جائیں گے تاکہ دنیا کی توجہ بھارت کے ناجائز مقبوضہ جموں و کشمیر میں کشمیری عوام کے مصائب کی طرف مبذول کرائی جائے۔

مظفرآباد میں پاسبان حریت وی سمیت حریت تنظیموں نے شہید برہان مظفروانی چوک پر ریلیاں نکالی ہیں۔

ریلیوں کے شرکاء مظفرآباد میں اقوام متحدہ کے مبصر مشن کے دفتر کی طرف مارچ کریں گے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

AD-1