Premium Content

Add

سردار ایاز صادق نے اسپیکر قومی اسمبلی کا حلف اٹھا لیا

Print Friendly, PDF & Email

سردار ایاز صادق نے اسپیکر قومی اسمبلی کے عہدے کا حلف اٹھا لیا۔ سبکدوش ہونے والے اسپیکر راجہ پرویز اشرف نے ان سے حلف لیا۔

سردار ایاز صادق 199 ووٹ لے کر قومی اسمبلی کے عہدے پر منتخب ہوئے۔ سنی اتحاد کونسل کے امیدوار ملک محمد عامر ڈوگر نے 91 ووٹ حاصل کیے۔

نشست سنبھالنے کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے ان پر اعتماد کرنے پر مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی، ایم کیو ایم، مسلم لیگ (ق)، آئی پی پی اور بلوچستان عوامی پارٹی کے رہنماؤں اور اراکین کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے یقین دلایا کہ وہ ایوان کی کارروائی کو قواعد و ضوابط کے مطابق آگے بڑھائیں گے۔سردار ایاز صادق نے کہا کہ ارکان کو ایوان کے فلور پر اظہار خیال کا پورا موقع دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ان کے دفتر کے دروازے تمام ممبران کے لیے ہمیشہ کھلے رہیں گے۔سردار ایاز صادق نے کہا کہ اختلاف رائے اور تنقید جمہوریت کا نچوڑ ہے تاہم اس بات پر زور دیا کہ اسے اصلاحات اور ملک کی بہتری کی طرف جانا چاہیے۔

اسپیکر نے نوٹ کیا کہ موجودہ سیاسی تناؤ ملک کے مفاد میں نہیں، ملک کو درپیش مسائل سے نمٹنے کے لیے قومی اتفاق رائے اور مشترکہ حکمت عملی بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت اور اپوزیشن دونوں ارکان اس ایوان کا حصہ ہیں اور ان کی کوشش ہوگی کہ انہیں ساتھ لے کر چلیں۔

سنی اتحاد کونسل کے امیدوار عامر ڈوگر نے نومنتخب اسپیکر سردار ایاز صادق کو مبارکباد دی۔ انہوں نے کہا کہ سردار ایاز صادق کے لیے یہ اعزاز کی بات ہے کہ وہ تیسری بار منتخب ہوئے ہیں۔

پیپلز پارٹی کے سید غلام مصطفیٰ شاہ ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی منتخب ہوگئے۔ انہوں نے 197 ووٹ حاصل کیے جب کہ سنی اتحاد کونسل کے امیدوار جنید اکبر نے 92 ووٹ حاصل کیے۔

بعد ازاں نومنتخب ڈپٹی سپیکر نے اپنے عہدے کا حلف لیا۔ اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے ان سے حلف لیا۔

نومنتخب ڈپٹی سپیکر سید غلام مصطفیٰ شاہ نے حلف اٹھانے کے بعد ارکان اسمبلی کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے الیکشن میں ان کی حمایت کی۔ انہوں نے جمہوری عمل میں حصہ لینے پر سنی اتحاد کونسل کے امیدوار جنید اکبر کو بھی سراہا۔

سید غلام مصطفیٰ شاہ نے ان کی حمایت پر پاکستان مسلم لیگ نواز، پاکستان پیپلز پارٹی، متحدہ قومی موومنٹ، پاکستان مسلم لیگ قائداعظم اور بلوچستان عوامی پارٹی کی قیادت کا بھی شکریہ ادا کیا۔

مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا کہ کوئی فرد، جماعت یا ادارہ ملک کو موجودہ بحرانوں سے اکیلے نہیں نکال سکتا۔ انہوں نے قانون سازوں پر زور دیا کہ وہ اتحاد قائم کریں اور جمہوریت اور پارلیمنٹ کو مضبوط بنانے کے ساتھ ساتھ آئین کی بالادستی کو برقرار رکھنے کے لیے سیاسی پولرائزیشن سے گریز کریں۔

ایوان کا اجلاس اتوار کی صبح 11 بجے دوبارہ ملتوی کر دیا گیا ۔

Don’t forget to Subscribe our Youtube Channel & Press Bell Icon.

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

AD-1