Premium Content

بلاگ تلاش کریں۔

مشورہ

عدالت نے کہا تو اعتماد کا ووٹ لیں گے پھر اسمبلی توڑ دیں گے: عمران کی زیر صدارت اجلاس میں فیصلہ

Print Friendly, PDF & Email

سابق وزیراعظم و پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ عدالت نے کہا تو ہم اعتماد کا ووٹ لیں گے۔

لاہور میں عمران خان کی زیر صدارت پنجاب کے صوبائی وزراء کا اجلاس ہوا جس میں ملکی و صوبے کی سیاسی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

مزید پڑھیں: https://republicpolicy.com/punjab-ma-aitemad-ka-vote-pti-k-liye-arakeen/

عمران خان نے اسمبلی میں اعتماد کے ووٹ اور اگلے الیکشن کی تیاریوں کی ہدایت کی اور کہا کہ امپورٹڈ ٹولے کو الیکشن سے بھاگنے نہیں دیں گے ، سازشی ٹولہ اسلام آباد کے بعد کراچی کے بلدیاتی الیکشن سے بھی بھاگنے کی کوشش کر رہا ہے، انہیں معلوم ہے عوام نے انہیں مکمل طور پر مسترد کر دیا ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ اسمبلی میں اعتماد کے ووٹ کے بعد ہم الیکشن کیلئے عوام کے پاس جائیں گے، ملکی مسائل کا حل نئے الیکشن اور عوامی مینڈیٹ سے آنے والی حکومت ہی دے سکتی ہے۔

ذرائع پی ٹی آئی کے مطابق عمران خان نے کہا اعتماد کا ووٹ عدالتی فیصلے سے مشروط ہے، عدالت نے کہا تو ہم اعتماد کا ووٹ لیں گے لیکن ہمیں اعتمادکے ووٹ کے لیے تیاری کرنی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان نے وزراء کو ارکان اسمبلی سے رابطے میں رہنےکی ہدایت کی۔

ذرائع نے بتایا کہ صوبائی وزرا ءنے عمران خان کو بریفنگ میں بتایا کہ اعتماد کا ووٹ لینا پڑا تو ہمیں مسئلہ نہیں ہوگا۔

مزید پڑھیں: https://republicpolicy.com/pti-ka-9-january-ko-wazir-alaa-punjab-sy-aitemad/

ذرائع کا کہنا ہے کہ ہر وزیرکو اس کے متعلقہ ڈویژن کی ذمہ داری سونپ دی گئی ہے اور ہدایت کی گئی ہے کہ ہر وزیر اپنے ڈویژن کے ارکان اسمبلی سے رابطے میں رہے گا۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اعتماد کا ووٹ لیتے ہی فوری اسمبلی تحلیل کردی جائے گی۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos