Premium Content

بلاگ تلاش کریں۔

مشورہ

حزب اللہ کے خلاف تمام آپشنز استعمال کر سکتے ہیں: اسرائیل

Print Friendly, PDF & Email

اسرائیلی فوج کے ترجمان ہنگاری کا کہنا ہے کہ حزب اللہ سے نمٹنے کے لیے تمام آپشنز موجود ہیں اور اسرائیل تمام حالات کے لیے تیار ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ حزب اللہ کے سیکرٹری جنرل حسن نصر اللہ لبنان کو خطرناک راستے پر لے جا رہے ہیں۔

عرب میڈیا رپورٹ کے مطابق ایک انٹرویو میں ہگاری نے کہا کہ حزب اللہ لبنانی عوام کا استحصال کر رہی ہے اور ان کو سچائی سے دور کر رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا ہے کہ حزب اللہ لبنانیوں کے درمیان چھپی ہوئی ہے، اسرائیلی فوج خاص طور پر حزب اللہ کو نشانہ بناتی ہے اور اس کے ارکان کے ٹھکانوں کا علم رکھتی ہے، ہماری ترجیح حزب اللہ کے رہنماؤں اور ارکان کو نشانہ بنانا ہے، ہم نے گزشتہ اکتوبر میں جھڑپوں کے شروع ہونے کے بعد سے اب تک حزب اللہ کے 430 ارکان کو مارا ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے زور دیا کہ ایران حزب اللہ کو بڑھاوا دے رہا ہے اور خطے میں کشیدگی چاہتا ہے اور نصر اللہ خطے کو کشیدگی کی طرف لے جا رہے ہیں، ہم لبنانی عوام سے نہیں لڑنا چاہتے بلکہ ہم حزب اللہ سے لڑ رہے ہیں۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ اسرائیلی فوج ہر طرح ک اقدامات کر رہی اور حزب اللہ سے لڑنے کے لیے پوری طرح تیار ہے، ہم حزب اللہ کا مقابلہ کرنے کے لیے تمام حالات کے لیے تیار ہیں، ہماری فوج مضبوط ہے اور لبنان کے ساتھ سرحدوں کی حفاظت کی ضمانت دے گی۔

واضح رہے اسرائیلی فوج نے منگل کو لبنان میں حملے کے آپریشنل منصوبوں کی منظوری کا اعلان کیاتھا، اس اعلان سے قبل اسرائیلی وزیر خارجہ کاٹز نے ہر قسم کی جنگ کی صورت میں حزب اللہ کو ختم کرنے کے عزم کا اظہار کیا تھا۔

لبنان اور اسرائیل کی سرحد پر حزب اللہ اور اسرائیلی فوج کے درمیان آٹھ ماہ سے زائد عرصے سے جنگ جاری ہے۔

غزہ کی پٹی میں سات اکتوبر کو اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ شروع ہونے کے بعد سے 8 اکتوبر سے حزب اللہ اور اسرائیل تقریباً روزانہ کی بنیاد پر بمباری کا تبادلہ کرتے ہیں۔

Don’t forget to Subscribe our Youtube Channel & Press Bell Icon.

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos