Premium Content

بلاگ تلاش کریں۔

مشورہ

جب ججز ہمارے معاملات میں دخل اندازی کریں گے، تو ہم بھی سوال اٹھائیں گے، وزیر دفاع

Print Friendly, PDF & Email

وزیردفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ جب ججز ہمارے معاملات میں دخل اندازی کریں گے توپھر ہم بھی سوال کریں گے۔

قومی اسمبلی میں پالیسی بیان  پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر دفاع خواجہ آصف  نے کہا کہ سپریم کورٹ کی جانب سے سوموٹو کیس سے متعلق کچھ سوالات اٹھائے گئے ہیں، اس کے اثرات موجودہ حالات کے ساتھ مستقبل پر بھی منفی پڑ سکتے ہیں،  پورا سپریم کورٹ بیٹھ کر اس مسئلے کا حل تلاش کرے،  مختلف فریق سے پوچھے اور ایسا حل دے جو آنے والے وقت میں آب حیات ہو۔

مزید پڑھیں: https://republicpolicy.com/alaa-adlia-k-do-judges-ka-muslim-league-n-k-liye-rawiya/

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی حکومت ختم کرکے زیادتی کی گئی، میں اپنی حدود کراس کرنا نہیں چاہتا، میں تنقید کرنا نہیں چاہتا،  اچھی بات یہ ہے کہ 9 رکنی بینچ بنایا گیا ہے،   یہ فیصلہ 9 ججز نہیں بلکہ فل کورٹ کو سننا چاہیے، پوری کورٹ فریقین کو سن کر فیصلہ کرے، پوری قوم عدالتی فیصلوں سے متاثر ہوتی ہے۔

 خواجہ آصف کے مطابق  پوچھنا چاہتا ہوں کہ ایک شکایت رہتی ہے کہ ارکان پارلیمنٹ ججز کا نام لےکر تنقید کرتے رہتے ہیں، کچھ ججز پر تنقید کی جاتی ہے تو کچھ پر کیوں نہیں ہوتی؟جسٹس ثاقب اورجسٹس کھوسہ پرتنقید ہوتی ہےتوجسٹس ناصرالملک پرکیوں نہیں ہوتی؟ یہ سوال عدلیہ کے لیے ہے کہ آخر ایسا کیوں ہے؟ جب ججز ہماری حدود میں داخل ہونگے تو ہم بھی سوال اٹھائیں گے۔ انھوں نے مزید کہا کہ ایک سوال یہ بھی اٹھایا گیا ہےکہ دو اسمبلیوں کی تحلیل درست ہوئی ہے یا نہیں؟آئین کو ری رائٹ کرنا عدلیہ کا کام نہیں ہے،جس طرح آرٹیکل 63 کو ری رائٹ کیا گیا ہے یہ اس کے اثرات ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos