Premium Content

پنجاب اسمبلی کے اسپیکر نے مخصوص نشستوں پر سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں 27 ایم پی اے کو معطل کر دیا

Print Friendly, PDF & Email

لاہور: حکمران اتحاد کو بڑا دھچکا، اسپیکر پنجاب اسمبلی ملک محمد احمد خان نے سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں مخصوص نشستوں پر 27 ایم پی ایز کی رکنیت معطل کر دی۔

اس ہفتے کے شروع میں، سپریم کورٹ نے پشاور ہائی کورٹ (پی ایچ سی) اور الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے سنی اتحاد کونسل (ایس آئی سی) کو دیگر جماعتوں کو مخصوص نشستیں دینے کے فیصلے کو معطل کر دیا تھا۔

اپوزیشن کے قانون سازوں نے اس فیصلے کا خیرمقدم کیا اور ڈیسک بجا کر اسپیکر کی تعریف کی۔

تفصیلات کے مطابق سنی اتحاد کونسل کے ایم پی اے رانا آفتاب نے پوائنٹ آف آرڈر اٹھایا تھا جس میں مخصوص نشستوں پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ایم پی اے کی معطلی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

اسپیکر ملک احمد خان نے پوائنٹ آف آرڈر کو درست قرار دیتے ہوئے مخصوص نشستوں پر 27 ایم پی ایز کی رکنیت معطل کر دی۔ اسپیکر نے ایوان میں سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی پڑھ کر سنایا۔

اسپیکر کے حکم پر آج سے عملدرآمد ہو گا اور تمام معطل ایم پی اے کے داخلے پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے۔

سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں حکمران اتحاد نے 24 خواتین قانون سازوں اور تین اقلیتی ایم پی اے کو کھو دیا۔

معطل کیے گئے ایم پی اے میں مسلم لیگ ن کے 23، پیپلز پارٹی کے دو اور آئی پی پی اور مسلم لیگ ق کا ایک ایک رکن شامل ہے۔

اسپیکر کے حکم کے بعد پنجاب اسمبلی میں نمبر گیم بھی تبدیل ہو گئی۔

اس سے قبل مسلم لیگ ن کو ایوان میں 226 ایم پی ایز کی حمایت حاصل تھی اور اب اس کے 23 ارکان اسمبلی کی معطلی کے بعد اس کی تعداد 203 ہو جائے گی۔

Don’t forget to Subscribe our Youtube Channel & Press Bell Icon.

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos