Premium Content

لگژری اشیاء پر 25  فیصد ٹیکس نافذ ،آئی ایم ایف کی شرائط پر عملدرآمد  

Print Friendly, PDF & Email

اسلام آباد: وفاقی کابینہ  نے آئی ایم ایف کی شرائط پر عملدرآمد  کرتے ہوئے لگژری اشیاء پر 25  فیصد ٹیکس نافذ کرنے کی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق ٹیکس کی نئی شرح کا نفاذ یکم مارچ سے ہوگا۔ درآمدی موبائل فونز,آٹو سی بی یو,چاکلیٹ,جوسز پر سیلز ٹیکس25 فیصد ہو گا۔

کارپیٹس,بیوٹی پروڈکٹ,ٹشو پیپرزکتوں اور بلیوں کی خوراک بھی ان اشیا میں شامل ہیں جن پر 25 فیصد کی شرح سے سیلز ٹیکس کا نفاذ ہوگا۔ مچھلی,فٹ وئیر، فروٹس ، ڈرائی فروٹس، فرنیچر،آئس کریم ,جیم, جیلی،لیدر جیکٹ، شیمپو,سن گلاسز ، ٹریولینگ بیگز ،سوٹ کیس ، اسلحہ,پاستا,موسیقی کےآلات اورفروزن گوشت پر بھی 25 فیصد سیلز ٹیکس لگایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: https://republicpolicy.com/imf-ki-charo-sharayat-pori/

ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ ہوم اپلائنسز، سینیٹری اور باتھ روم کے سامان، دروازوں ، کھڑکیوں کے فریمز، ڈیکوریشن کے سامان، کراکری اور کارن فلیک پربھی 25 فیصد سیلز ٹیکس لاگو ہوگا۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos