Premium Content

برطانوی شہزادہ ہیری کے 25 افغانوں کو مارنے کے بیان پر انس حقانی کا ردعمل سامنے آگیا ہے

Print Friendly, PDF & Email

برطانوی شہزادے ہیری نے اپنی آنے والی سوانح عمری میں انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے افغانستان میں تعیناتی کے دوران 6 فضائی مشن کیے اور  25 افغان شہریوں کو ہلاک کیا۔

شہزادہ ہیری نے اپنی کتاب میں لکھا ہے کہ انہوں نے افغانستان میں بطور  اپاچی ہیلی کاپٹر  پائلٹ ڈیوٹی کے دوران 25 افراد کو  ہلاک کیا۔

انہوں نے لکھا کہ افغانستان میں تعیناتی کے دوران میرا نمبر 25 رہا، یہ نمبر میرے لیے باعث اطمینان تو نہیں لیکن باعث شرمندگی بھی نہیں، جنگی حالت میں مارے جانے والوں کو شطرنج کے مہرے سمجھ کر بساط سے ہٹایا۔

مزید پڑھیں: https://republicpolicy.com/afghanistan-ma-duran-duty-25-afrad-ko-halak-kia/

تاہم اب اس حوالے سے طالبان کے سنیئر رہنما انس حقانی کا ردعمل سامنے آیا ہے۔

اپنے ردعمل میں انس حقانی نے کہا کہ ہیری نے جن لوگوں کو مارا وہ افغان تھے جن کے خاندان بھی ہیں۔

انس حقانی نے مزید کہا کہ مسٹر ہیری! جن لوگوں کو آپ نے قتل کیا وہ شطرنج کے مہرے نہیں تھے، وہ انسان تھے۔

انس حقانی نے شہزادہ ہیری کو جنگی جرائم کا مرتکب بھی قرار دیا اور کہا کہ سچ وہی ہے جو آپ نے کہا کہ ہمارے بے گناہ لوگ آپ کے فوجیوں کیلئے شطرنج کے مہرے جیسے تھے، پھر بھی اس کھیل میں آپ کو ہی شکست ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ افغان شہریوں کے قاتلوں میں آپ کی طرح معقولیت موجود نہیں کہ وہ بھی  اپنے جنگی جرائم کا اعتراف کریں، میں عالمی فوجداری عدالت سے توقع نہیں کرتا کہ وہ آپ کو طلب کرے گی یا انسانی حقوق کے علمبردار آپ کے بیان کی مذمت کریں گے کیوں کہ وہ آپ کے معاملے میں اندھے اور بہرے ہیں لیکن امید ہے کہ یہ مظالم انسانیت کی تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھے جائیں گے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos