Premium Content

حکومتی جماعتوں نے دو ججز کی بجائے فل کورٹ بنانے کی درخواست دائر کر دی

Print Friendly, PDF & Email

وفاقی حکومت میں شامل پاکستان مسلم لیگ (ن)، پیپلزپارٹی اور جمعیت علمائے اسلام نے سپریم کورٹ میں پنجاب اورخیبرپختونخوا میں انتخابات سےمتعلق ازخودنوٹس میں فل کورٹ بنانے کیلئے درخواست دائر کردی۔

درخواست فاروق ایچ نائیک،کامران مرتضیٰ اور منصور عثمان ایڈووکیٹ کے توسط سے دائر کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں: https://republicpolicy.com/party-sarbarahi-sy-hatany-ka-case-imran-khan-ko-jawab/

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ کیس کی سماعت کیلئے تمام ججز پر مشتمل فل کورٹ بنائی جائے اور فل کورٹ میں جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کو فل کورٹ میں شامل نہ کیا جائے۔ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ دونوں ججز  پہلے سے اپنا مائنڈ کیس میں اپلائی کرچکے ہیں، کئی آئینی، قانونی اور عوامی اہمیت کے سوال سامنے آ چکے ہیں جن پر سماعت ضروری ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Latest Videos